logo-mini

تصدیق و تحقیق

بنا تصدیق کسی حدیث یا آیت کو فاروڈ نہ کریں
قرآن میں اﷲ تعالیٰ فرماتے ہیں کہ
“٭کوئی بات پھیلانے سے پہلے تصدیق لازم کرلیا کرو٭”
دوسرا باربار اﷲ تعالیٰ فرماتے ہیں کہ
“٭اس سے بڑا ظالم کون جو جھوٹ باندھے اﷲ پر اور اﷲ کے رسول صلی اﷲ علیہ وسلم پر٭”
سوچیں جب کسی کے متعلق عام بات کے لئے بھی یہی حکم ہے تو آیت یا حدیث کے متعلق تصدیق کتنی ضروری ہے
اب مقصد یا نیت اچھی ہو یا بری، ایک لفظ کی تحریف کی بھی اجازت ممکن ہی نہیں
کیا کوئی انسان زیادہ عقل و شعور یا حکمت والا ہے؟ان کو زیادہ علم ہے کہ دعوت حق کی خاطر کونسے الفاظ زیادہ پر اثر ہونگے؟ آدھی سے زیادہ دنیا پر پھیلنے والا یہ واحد دین بنا کسی جھوٹ یا ملاوٹ کے ہی پھیلا تھا
تصدیق کرلو کہ یہ واقعی آیت یا حدیث ہے؟تمام الفاظ اور ترجمہ درست ہیں؟ پھر چاہے کوئی جتنا مرضی قابل اعتبار ہو، آپ اپنا تصدیق و تحقیق کا فرض لازم نبھائیں۔ آسیہ روبی

Asiya Ruby

لوحِ قلم کا مقصد آپ کی حوصلہ افزائی کرنا ہی نہیں بلکہ آپ کے یقین اورسوچ کومضبوط کرنا او معلومات پہنچانا ہے آپ کی سوچ ، کامیابی ، خوشی ، راحت اور سکون تک رسائی میں سب سے بڑی رکاوٹ ہے۔ ایک سوچ تنکے کو بھی پہاڑ بنا سکتی ہے۔ وہی سوچ ایک پہاڑ کوتنکے کی .مانند کمزوربھی بنا سکتی ہے، یعنی آپ کی اپنی سوچ ہی ممکن کو ناممکن اور ناممکن کو ممکن بنانے کی صلاحیت رکھتی ہے۔ آسیہ روبی The purpose of the "LoheQalam" is not only to encourage you but also to strengthen your beliefs and thinking and to convey information The biggest obstacle is access to your thinking, success, happiness, comfort, and tranquility. One thought can turn straw into a mountain. The same thinking can make you as weak as a mountain, that is, your own thinking is capable of making the impossible possible and the impossible possible


Leave a Comment

Leave a Reply