logo-mini

میری نیت اور نظر صاف ہے

میری نیت اور نظر صاف ہے

اﻟﺴَّـــــــﻼَﻡُ ﻋَﻠَﻴــــﻜُﻢ ﻭَﺭَﺣﻤَﺔُ اﷲ ﻭَﺑَﺮَﻛـَـﺎﺗُﻪ
خدارا اپنے قیمتی وقت میں سے تھوڑا سا وقت صرف کرکے پورا آرٹیکل پڑھے بنا کوئی رائے قائم مت کریں۔
یہ جو سوچ ہے کہ ہمارے باپ بھائی بہت صاف نظر کے ہیں ان سے کیا پردہ؟
تو وہ آپکے باپ اور بھائی ہیں،دوسروں کے لئے وہ نامحرم ہیں، ان سے اپنے موبائل کے کانٹیکٹس اور ان کی تصاویر یا باتیں شئیر نہ کریں، نہ ہی ان کے سامنے آنے پر ضد کریں،
پھر دوسری سوچ میرے دیور ہیں ان سے کیا پردہ یہ میرے سگے بھائی جیسے ہیں ، انکی نظر بہت صاف ہے، نیت صاف ہے، میری بھی نیت اور نظر صاف ہے (دیور کو سانپ کہا گیا حدیث میں یعنی غیروں سے زیادہ خطرناک)
پھر ایسا نفس پر غرور تو کسی پیغمبر نے بھی نہیں کیا تھا، جو پیدا ہی پاکیزہ اور معصوم ہوئے تھے
بمطابق قرآن ۔۔
یوسف علیہ السلام نے بھی عزیز مصر کی بیوی سے بچنے پر االلّٰه کا یہی کہہ کر شکر ادا کیا کہ
“اگر تو نے مجھے آج نہ بچایا ہوتا تو قریب تھا کہ میرا نفس مجھے بہکا دیتا”۔۔
“سبحان ﷲ” ۔۔۔
تو خود سوچیں کہ ہمارے گناہوں میں ڈوبے نفوس کمزور پیدا کئے گئے ، اپنے ساری زندگی کی پرہیزگاری کے بعد بھی نفس کو پاک یا نیت کو یا نظر کو پاک کہنے کے دعوی کسی بھی مسلم کو زیب نہیں دیتا
دل کے پردے کی دعوی داروں کو سوچنا چاہئے کہ امہات المومنین رضوان اﷲ علیہم اجمعین سے بڑھ کر دل کن کے پاک و صاف ہوسکتے ہیں ؟
پردہ دار لڑکیاں اور عورتیں میں نے کچھ ایسی بھی دیکھی ہیں جو اپنے گرد کے کے کچھ نا محرم مردوں سے کچھ اس طرح کلوز ہوتی ہیں اور جواب یہی کہ میرا بھائی ہے اسکی اور میری نیت اور نظر صاف ہے۔۔ پارٹی یا شادیوں پر بے ہنگم ڈانس کرنے والی کم از کم اپنے آپکو پردہ دار مت کہیں، عجب حیرانگی ہوتی ہے ہم کہنے یا عمل سے قبل سوچتے نہیں؟
ہم جو دیکھنا بھی گوارہ نہیں کرتے تھے پردہ سکرین پر ۔۔
آج وہی سب کچھ ہندوؤں کی ہو بہو نقالی ہماری ہی بہنیں یہ کہہ کر کرتی ہیں کہ خوشی کا موقع ہے اسی طرح مرد حضرات دیکھ رہے ہیں فلمیں بن رہی ہیں
ان میں سے اکثر پیسہ کی خاطر کرتی ہیں یا مجبوری میں
لیکن یہ مفت میں کرتی ہیں اور خوشی سے کرتی ہیں۔۔ تو زیادہ غلط کون ہوا؟؟؟
پھر اس حد تک جا کر بھی اپنے آپکو پاک سمجھنا پردہ دار کہنا کچھ سمجھ نہیں آتی۔۔
پھر ایکٹریس یا ڈانسرز کو ہم غلط نگاہ سے کیوں دیکھتے ہیں ہمارے گرد سب عورتیں جن کو ہم بچپن سے دیکھ رہے ہیں کہ ہر تقریب پر کر رہی ہیں ،
اور جو نہ کرے اسکو الٹا طعنے کستی کہ سب کے سامنے اچھی خاصی تذلیل کردیتیں، یہ کہہ کر کہ اسکو کوئی خوشی نہیں؟؟؟؟
ایسے دوپٹہ لیا ہوا نماز پڑھنی یا شادی پر آئی؟ غلط کرنے والیوں کو سراہا جا رہا خوب تالیاں بجابجا کر داد و تحسین دی جاتی ہے اور صحیح ہونے پر طعنے ؟؟؟
ایک اہم بات میں کسی کو یہاں نصیحت نہیں کر رہی میں اس قاںل ہوں ہی نہیں۔۔
صرف اتنا کہنا چاہتی ہوں کہ اگر پردہ نہیں کرنا چاہتی یا یہی سب کرنا چاہتی ہیں جب کرنا چاہیں تب شروع کریں کہ یہ آپکا ﷲ کے ساتھ معاملہ ہے،
اللّٰه جب تک ہدایت نہ دے میں یا آپ کچھ نہیں کر سکتے لیکن بس اتنی سی درخواست ہے کہ اپنے الفاظ کو سوچ کر بولیں دوسروں کو گمراہ کرنے کی کوشش مت کریں، یا خاص کر ایسی باتیں کہہ کر اسلام کو خراب مت کریں اپنی ذات تک اپنے اچھے یا برے عمل کی ذمہ داری رکھیں اور دوسروں کو طعنے نہ دیں
گناہ کرنے سے زیادہ غلط اس گناہ کو جسٹی فائی کرنا ہے، اس غلطی پر ڈٹے رہنا سہی کہتے یا سمجھنے رہنا غلط ہے
دوسری بات یہی گناہ نہ کرنے والوں کو غلط نہ سمجھیں اس کا ساتھ دیں
آسانیاں پیدا کریں اپنے آپکو پاک اور صاف اور دوسروں کو کم تر مت سمجھیں۔ غلط بات یا برائی کی نشاندہی کرنا غلط نہیں ہاں غلط ہے برائی کرنے والے کر برا کہنا یا سمجھنا اس سے نفرت کرنا۔
االلّٰه تعالیٰ ہم سب کو خاص طور پر مجھے راہ ہدایت عطا فرمائے اور صراط مستقیم پر چلائے ، اپنی رضائے کاملہ عطا فرمادے ۔ آمین یارب العالمین
مطلوب دعا۔۔۔ آسیہ روبی

Asiya Ruby

لوحِ قلم کا مقصد آپ کی حوصلہ افزائی کرنا ہی نہیں بلکہ آپ کے یقین اورسوچ کومضبوط کرنا او معلومات پہنچانا ہے آپ کی سوچ ، کامیابی ، خوشی ، راحت اور سکون تک رسائی میں سب سے بڑی رکاوٹ ہے۔ ایک سوچ تنکے کو بھی پہاڑ بنا سکتی ہے۔ وہی سوچ ایک پہاڑ کوتنکے کی .مانند کمزوربھی بنا سکتی ہے، یعنی آپ کی اپنی سوچ ہی ممکن کو ناممکن اور ناممکن کو ممکن بنانے کی صلاحیت رکھتی ہے۔ آسیہ روبی The purpose of the "LoheQalam" is not only to encourage you but also to strengthen your beliefs and thinking and to convey information The biggest obstacle is access to your thinking, success, happiness, comfort, and tranquility. One thought can turn straw into a mountain. The same thinking can make you as weak as a mountain, that is, your own thinking is capable of making the impossible possible and the impossible possible


Leave a Comment

Leave a Reply