logo-mini

پیار کا دن

پیار کا دن

السَـــــــلاَم وُ عَلَيــْــكُم و َرَحْمَةُ ﷲ وَ بَرَكـَـاتُہ

اسلام تو ابتدا سے انتہا تک محبت کا درس دینے والا دین ھے وہ بھی ھر روز، سال میں ایک یا دو بار نہیں، ھر روز ھر پل ھر ایک سے،تو ھم غیر مذھبوں سے محبت کا درس کیوں سیکھیں، جن کی نفرتوں اور بے رحمی کی داستانیں مسلم ممالک کے معصوم اور بے قصور بچے اور عورتیں تک بیان کررھے ھیں
قرآن میں اللہ تعالٰیٰ ہمیں بار بار محبت اور یگانگت، ااتحاد، بھائی چارہ، اجتماعیت اور ھمدردی کی تعلیم دی ھے اور ہمارے پیارے آقا رحمت اللعالمیٰن صلیٰ اللہ علیہ وسلم نے بھی اپنے اعمال اور اقوال میں بھی ھمیں ھمیشہ یہی سکھایا ھے، یہاں تک کہ کسی بھی مخلوق کو تکلیف دینے سے منع فرمایا، دوسروں میں مسکراھٹیں بانٹنے کا حکم دیا، تحائف اور مہمان نوازی سب اسلام کا ھی خاصہ ھیں، اھلِ خانہ اوراچھا کھلانے پلانے پر ثواب، میاں بیوی کی محبت عبادت، اولاد سے شفقت اور محبت عبادت، بیوی سے احسن سلوک کا حکم ، والدین اور شوھر کی اطاعت کی اللہ اور رسول صلیٰ اللہ علیہ وسلم کے حکم کے بعد اطاعت گزاری کا حکم، عورت کو عزت کی نگاہ سے دیکھنے کا حکم، عورتوں کی حفاظت کی خاطر پردہ داری کا حکم، وعورتوں کوغلط نظر سے نہ دیکھنے کا حکم ، عورت و مرد کو نگاہوں اور شرم گاھوں کی حفاظت کرنے کا حکم، ایک دوسرے سے زیادتی نہ کرنے کا حکم، فیصلہ کرتے وقت امیری غریبی اور رشتوں کا خیال نہ رکھنے کا حکم، شادی کے معاملے میں لڑکا اور لڑکی کی رضا معلوم کرنا لازم و ملزوم امر، شادی سے پہلے ایک دوسرے کو دیکھنے کی اجازت، نکاح سادگی سے کرنے کا حکم، شادی کے معاملے میں لڑکے یا لڑکی کی ظاہری صورت اور مال و دولت کو اھمیت نہ دینے کا حکم، کسی کو غلط نام سے نہ پکارنے کا حکم، گالی دینے سے سختی سے ممانعت، کافر کو بھی کافر کہہ کر نہ پکارنے کا حکم، غیر مذھبوں کے خداؤں کو برا کہنے سے ممانعت، اونچی آواز سے نہ بولنے کا حکم، پہاڑوں اور درختوں کو نہ کاٹنے کا حکم، پانی کے اسراف سے ممانعت، یتیموں کے ساتھ اچھا سلوک کرنے کا حکم، غریبوں ،مسافروں اور محتاجوں کا خاص خیال کرنے کا حکم، مسجدوں میں تلاوت تک کی ممانعت تاکہ کوئی بیمار یا طالبعلم ڈسٹرب نہ ھوسکے، امام مسجد کے لئے فرض نمازوں کو مختصر پڑھنے کا حکم تاکہ کوئی نمازی اگر بیمار یا ضیعف ھے یا جلدی میں ھے تو حرج نہ ھو، دریا میں پیشاب کرنے سے ممانعت کہ پانی میں رھنے والی دوسری مخلوقات کو تکلیف نہ ھو، جنگ و جدل میں بچوں، عورتوں اور بوڑھوں کا ہی نہیں، فصلوں اور مویشیوں تک کا خیال رکھنے کا حکم، فتح مکہ میں عفو و در گزر کی ایسی اعلیٰ ترین مثال قائم کی جو پوری عالمیت کی تاریخ میں کہیں بھی نہیں ملتی، دل نہ چاھتے ھوئے بھی معاف کرنا سکھایا، معافی کو پسند فرمایا، غصہ سے سختی سے بچنے کی تلقین ، بناؤ سنگھار کرکے مردوں کےلئے آزمائش بننے سے سختی سے ممانعت، کیا کیا لکھوں، میرا دین تو ایسا مکمل ھے کہ میرے قلم میں اسکو بیان کرنے کی تاب نہیں، کوئی ذرا بھر بھی گنجائش نہیں کسی بھی معاملے میں، یہاں تک کہ کفار کے ساتھ بھی اچھا سلوک کرنے کا حکم کہ شاید وہ آپکے حسنِ سلوک سے متاثر ھوکر اسلام قبول کرلیں، کفار سے سلوک اچھا کرو مگر دوستی مت کرو، انکے کسی عمل کی نقل مت کرو، انکو اپنا رازدار بھی مت بناؤ، تاکہ اپنی اور اپنے دین کی حفاظت کی خاطر۔
اور جب کوئی ویلنٹائن کی صورت سال بھر میں ایک دن مناتا نظر آئے محبت کی یادگار کی صورت تو انکی عقل پر ماتم کرنے کو دل چاھتا ھے کہ کس مذھب یا کن لوگوں کے نقشِ قدم پر چلنا چاھتے ھو، جن کو محبت کا معنی بھی معلوم نہیں، جو اپنی عورتوں کو آج تک کبھی عزت نہیں دے پائے؟ چلو مان لیا اگر یہ دن درست ھے تو پھر اسکا اثر ھمارے معاشرے پر غلط کیوں مرتبہ ھو رھا ھے؟
کیوں بہنوں یا بیٹیوں کی عزت اس دن معمول سے بہت زیادہ روندی جاتی ھے؟ آپ کسی کی بیٹی یا بہن کے ساتھ جیسا سلوک کر تے ھو دوسرا کوئی آپکی بیٹی یا بہن کے ساتھ وھی سلوک کرے گا، پورے ملک میں کتنا اسراف ہوتا ھے وہ الگ، آپ اپنے آپ سے ایک بار تو پوچھ کر دیکھیں کہ جن کی آپ پیروی کرکے ان میں خود کو شامل کرنا چاھتے ھیں، وہ محبت کا مطلب بھی جانتے ھیں، اپنے پیارے دین کی پیروی کریں جو آپکو مناسب طریقے سے محبت کے اظہار سے منع نہیں کرتا گفٹ دینے کا حکم دیتا ھے، محبت کے درس اور طریقے سکھاتا ھے۔
تو پیروی کریں اپنے دین کی جو واحد دین ھے مکمل دین ھے, جو سرکش سے سرکش کافر کو بھی نرمی سے سمجھانے کا حکم دیتا ھے, فرعون جیسے انسان کو بھی نرمی سے سمجھانے کا موسیٰ علیہ السلام کو حکم ھوا, نرمی سے سمجھائی گئی بات دل پر اثر کرتی ھے.

“اور سمجھاؤ کہ سمجھانا ایمان والوں کو فائدہ دیتا ہے”.
سورۃ الذاریات

پیار، محبت ، اتحاد و بھائی چارہ کا درس دیتے ھوئے پیارے دین کی۔۔ آپ اپنی اقدار، اپنے دن ، اپنی پہچان اور اپنی ویلیوز بنائیں ۔

اللہ سے دعا ہے کہ ہمیں دنیا و آخرت میں نورِ ہدائت اور آسانیاں عطا فرمائے،میری اور آپکی زندگی کو کارآمد اور با مقصد بنا کر اپنی رضا عطا فرمائے۔اللھم یا رب اللعالمین
والسلام۔ ۔مطلوبِ دعا۔۔آسیہ روبی

يَٰٓأَيُّهَا ٱلَّذِينَ ءَامَنُوٓا۟ إِن تُطِيعُوا۟ ٱلَّذِينَ كَفَرُوا۟ يَرُدُّوكُمْ عَلَىٰٓ أَعْقَٰبِكُمْ فَتَنقَلِبُوا۟ خَٰسِرِينَ
Ya ayyuha allatheena amanoo in tuteeAAoo allatheena kafaroo yaruddookum AAala aAAqabikum fatanqaliboo khasireena
اے ایمان والو! اگر تم کافروں کے کہے پر چلے تو وہ تمہیں الٹے پاؤں لوٹادیں گے پھر ٹوٹا کھا کے پلٹ جاؤ گے
O People who Believe! If you obey the disbelievers, they will make you turn back on your heels, so you will then turn back as losers.
(3 : 149)
وَأَنزَلْنَآ إِلَيْكَ ٱلْكِتَٰبَ بِٱلْحَقِّ مُصَدِّقًۭا لِّمَا بَيْنَ يَدَيْهِ مِنَ ٱلْكِتَٰبِ وَمُهَيْمِنًا عَلَيْهِ ۖ فَٱحْكُم بَيْنَهُم بِمَآ أَنزَلَ ٱللَّهُ ۖ وَلَا تَتَّبِعْ أَهْوَآءَهُمْ عَمَّا جَآءَكَ مِنَ ٱلْحَقِّ ۚ لِكُلٍّۢ جَعَلْنَا مِنكُمْ شِرْعَةًۭ وَمِنْهَاجًۭا ۚ وَلَوْ شَآءَ ٱللَّهُ لَجَعَلَكُمْ أُمَّةًۭ وَٰحِدَةًۭ وَلَٰكِن لِّيَبْلُوَكُمْ فِى مَآ ءَاتَىٰكُمْ ۖ فَٱسْتَبِقُوا۟ ٱلْخَيْرَٰتِ ۚ إِلَى ٱللَّهِ مَرْجِعُكُمْ جَمِيعًۭا فَيُنَبِّئُكُم بِمَا كُنتُمْ فِيهِ تَخْتَلِفُونَ
Waanzalna ilayka alkitaba bialhaqqi musaddiqan lima bayna yadayhi mina alkitabi wamuhayminan AAalayhi faohkum baynahum bima anzala Allahu wala tattabiAA ahwaahum AAamma jaaka mina alhaqqi likullin jaAAalna minkum shirAAatan waminhajan walaw shaa Allahu lajaAAalakum ommatan wahidatan walakin liyabluwakum fee ma atakum faistabiqoo alkhayrati ila Allahi marjiAAukum jameeAAan fayunabbiokum bima kuntum feehi takhtalifoona
اور اے محبوب ہم نے تمہاری طرف سچی کتاب اتاری اگلی کتابوں کی تصدیق فرماتی اور ان پر محافظ و گواہ تو ان میں فیصلہ کرو اللہ کے اتارے سے اور اسے سننے والے ان کی خواہشوں کی پیروی نہ کرنا اپنے پاس آیا ہوا حق چھوڑ کر، ہم نے تم سب کے لیے ایک ایک شریعت اور راستہ رکھا اور اللہ چاہتا تو تم سب کو ایک ہی امت کردیتا مگر منظور یہ ہے کہ جو کچھ تمہیں دیا اس میں تمہیں آزمائے تو بھلائیوں کی طرف سبقت چاہو، تم سب کا پھرنا اللہ ہی کی طرف ہے تو وہ تمہیں بتادے گا جس بات میں تم جھگڑتے تھے
And O dear Prophet (Mohammed – peace and blessings be upon him) We have sent down the true Book upon you, confirming the Books preceding it, and a protector and witness over them – therefore judge between them according to what is sent down by Allah, and O listener, do not follow their desires, abandoning the truth which has come to you; We have appointed for you all, a separate (religious) law and a way; and had Allah willed He could have made you one nation, but the purpose (His will) is to test you by what He has given you, therefore seek to surpass one another in good deeds; towards Allah only you will all return, so He will inform you concerning the matter in which you disputed.
(5 : 48)
يَٰٓأَيُّهَا ٱلَّذِينَ ءَامَنُوا۟ لَا تَتَّخِذُوا۟ ٱلْيَهُودَ وَٱلنَّصَٰرَىٰٓ أَوْلِيَآءَ ۘ بَعْضُهُمْ أَوْلِيَآءُ بَعْضٍۢ ۚ وَمَن يَتَوَلَّهُم مِّنكُمْ فَإِنَّهُۥ مِنْهُمْ ۗ إِنَّ ٱللَّهَ لَا يَهْدِى ٱلْقَوْمَ ٱلظَّٰلِمِينَ
Ya ayyuha allatheena amanoo la tattakhithoo alyahooda waalnnasara awliyaa baAAduhum awliyao baAAdin waman yatawallahum minkum fainnahu minhum inna Allaha la yahdee alqawma alththalimeena
اے ایمان والو! یہود و نصاریٰ کو دوست نہ بناؤ وہ آپس میں ایک دوسرے کے دوست ہیں اور تم میں جو کوئی ان سے دوستی رکھے گا تو وہ انہیں میں سے ہے بیشک اللہ بے انصافوں کو راہ نہیں دیتا
O People who Believe! Do not make the Jews and the Christians your friends; they are friends of one another; and whoever among you befriends them, is one of them; indeed Allah does not guide the unjust.
(5 : 51)
إِنَّمَا وَلِيُّكُمُ ٱللَّهُ وَرَسُولُهُۥ وَٱلَّذِينَ ءَامَنُوا۟ ٱلَّذِينَ يُقِيمُونَ ٱلصَّلَوٰةَ وَيُؤْتُونَ ٱلزَّكَوٰةَ وَهُمْ رَٰكِعُونَ
Innama waliyyukumu Allahu warasooluhu waallatheena amanoo allatheena yuqeemoona alssalata wayutoona alzzakata wahum rakiAAoona
تمہارے دوست نہیں مگر اللہ اور اس کا رسول اور ایمان والے کہ نماز قائم کرتے ہیں اور زکوٰة دیتے ہیں اور اللہ کے حضور جھکے ہوئے ہیں
You do not have any friends except Allah and His Noble Messenger and the believers who establish the prayer and pay the charity, and are bowed down before Allah.
(5 : 55)

Asiya Ruby

آؤ اللہ کی رسی کو مل کر تھام لیں Our all posts are researched carefully and designed by us. قرآن سمجھنے والے کبھی فرقہ نہیں بن سکتے اور فرقہ بننے والے کبھی قران نہیں سمجھ سکتے


Leave a Comment

Leave a Reply