logo-mini

عزت کا دارومدار قیمتی لباس کیوں

عزت کا دارومدار قیمتی لباس کیوں

السَـــــــلاَم وُ عَلَيــْــكُم و َرَحْمَةُ ﷲ وَ بَرَكـَـاتُه!

گزشتہ روز میں ایک شادی میں شریک تھی کہ ایک لڑکی آئی جو دلہن کی کزن تھی جو کافی خوش شکل اور پڑھی لکھی اچھے گھرانے کی لگ رہی تھی میں اسکو مل کر متاثر ہوئی کہ اسی وقت دلہن نے اسکے کپڑوں پر تنقید شروع کردی کہ ہمارا معاشرے میں ایک مقام ہے عزت ہے اگر تمھارے پاس ڈھنگ کے کپڑے نہیں تھے تو مجھ سے میرے پرانے کپڑے لے جاتی جو ویسے بھی میں دے چکی ہوں ،میں اب اسکے کپڑوں کی طرف غور سے دیکھا تو وہ سستے کپڑے کے مگر جدید فیشن کے مطابق نفاست سے سلے ہوئے تھے، وہ لڑکی ابھی دکھی دل کے ساتھ خاموش بیٹھی اس دکھ سے نکلنے کی کوشش کر ہی رہی رتھی کہ دلہن نے پوچھا تمھاری شادی بھی اگلے ماہ ہی ہے نہ تو تم نے اپنے جہیز میں کیا کیا بنایا ہے میرا دیکھو یہ بھی وہ بھی وغیرہ وغیرہ تم بھی لازم اچھا جہیز ہی لے کر جانا ورنہ لوگ تھو تھو کریں گے سسرال میں بھی تمھارا حسن ،ہنر اعلیٰ تعلیم یا اخلاق کام نہیں آنے والا۔میں اس کی بات سے حیران رہ گئی کہ یہ کیسا سوال ھے؟؟ اس لڑکی کو میں نے دیکھا تو وہ آنسو چھپانے کی کوشش کر رہی تھی، مجھے بیحد افسوس ہوا کہ دوست ہو کر بھی اس کی ناحق تذلیل کرتی جا رہی ہے۔

اسی طرح کے واقعات ہم اکثر دیکھتے ہیں کیا کسی بھی انسان کو اللہ تبارک و تعالیٰ نے یہ حق دیا ہے کہ وہ اللہ کی دی ہوئی کسی نعمت پر اس طرح سے نمود و نمائش کرتا پھرے یا جس کے پاس اس نعمت کی کمی ہو اسکو اپنی جاہلانہ اور کڑوی کسیلی باتوں سے اسکی ذات کو نشانہ بنائے اسکا دل دکھائے؟؟ ہرگز نہیں االلہ تعالیٰ نے یہ حق کسی کو بھی نہیں دیا تو پھر اکثر لوگ کیوں کسی کے ذاتی معاملے میں مداخلت کرتے ہیں کسی کو اپنے سے کمتر سمجھنے کا حق کس نے دیا ؟؟اگر کوئی امیر ہے یا اسکے پاس اللہ کی کوئی بھی نعمت موجود ہے تو اس پر لازم ہے کہ وہ اللہ تعالیٰ کے شکر کے ساتھ اسکے بندوں کے ساتھ اس نعمت کو بانٹے اور اپنے سے کمتر کو نمود و نمائش کے ذریعے دل نہ دکھائے ورنہ وہی خدا جس نے آپکو نوازا ہے وہ چھیننا بھی جانتا ہے اور کسی کی دل آزاری پر سزا دینا بھی۔اللہ کا خوف کریں ورنہ آپکی حالت اسکے جیسی کرنے میں اللہ کو دیر نہیں لگے گی اور خدا کی ناراضگی الگ۔ کیونکہ اللہ تبارک و تعالیٰ اپنے حقوق معاف فرما دیتا ہے مگر بندوں کے حقوق یعنی حقوق العباد کبھی معاف نہیں فرماتا۔۔ اللہ تبارک و تعالیٰ ہم سب کو خاص طور پر مجھے دردمند دل اور غلط باتوں اور رسموں کے خلاف سوچنے اور انکے خلاف جہاد کرنے کی توفیق عطا فرمائے۔ اللھم یا رب اللعالمٰین

اللّہ پاک و برتر سے دل کی گہرائیوں سے التجا ہے کہ ہم سب کو دنیا و آخرت میں نورِ ہدائت اور آسانیاں عطا فرمائے اور دوسروں میں بانٹنے کی توفیق عطا فرمائے. اللھم آمیٰن یا رب اللعالمیٰن

والسلام۔۔مطلوبِ دعا۔۔آسیہ روبی

يَوْمَ يُحْمَىٰ عَلَيْهَا فِى نَارِ جَهَنَّمَ فَتُكْوَىٰ بِهَا جِبَاهُهُمْ وَجُنُوبُهُمْ وَظُهُورُهُمْ ۖ هَٰذَا مَا كَنَزْتُمْ لِأَنفُسِكُمْ فَذُوقُوا۟ مَا كُنتُمْ تَكْنِزُونَ
Yawma yuhma AAalayha fee nari jahannama fatukwa biha jibahuhum wajunoobuhum wathuhooruhum hatha ma kanaztum lianfusikum fathooqoo ma kuntum taknizoona
جس دن تپایا جائے گا جہنم کی آ گ میں پھر اس سے داغیں گے ان کی پیشانیاں اور کروٹیں اور پیٹھیں یہ ہے وہ جو تم نے اپنے لیے جوڑ کر رکھا تھا اب چکھو مزا اس جوڑنے کا،
The day when it will be heated in the fire of hell, and their foreheads and their sides and their backs will be branded with them; "Here is what you hoarded for yourselves; so now taste the joy of your hoarding!"
(9 : 35)
ثُمَّ بَدَّلْنَا مَكَانَ ٱلسَّيِّئَةِ ٱلْحَسَنَةَ حَتَّىٰ عَفَوا۟ وَّقَالُوا۟ قَدْ مَسَّ ءَابَآءَنَا ٱلضَّرَّآءُ وَٱلسَّرَّآءُ فَأَخَذْنَٰهُم بَغْتَةًۭ وَهُمْ لَا يَشْعُرُونَ
Thumma baddalna makana alssayyiati alhasanata hatta AAafaw waqaloo qad massa abaana alddarrao waalssarrao faakhathnahum baghtatan wahum la yashAAuroona
پھر ہم نے برائی کی جگہ بھلائی بدل دی یہاں تک کہ وہ بہت ہوگئے اور بولے بیشک ہمارے باپ دادا کو رنج و راحت پہنچے تھے تو ہم نے انہیں اچانک ان کی غفلت میں پکڑ لیا
Then We changed the misfortune into prosperity to the extent that they became numerous and said, "Indeed grief and comfort did reach our ancestors" – so We seized them suddenly in their neglect.
(7 : 95)
وَمِنْهُم مَّنْ عَٰهَدَ ٱللَّهَ لَئِنْ ءَاتَىٰنَا مِن فَضْلِهِۦ لَنَصَّدَّقَنَّ وَلَنَكُونَنَّ مِنَ ٱلصَّٰلِحِينَ
Waminhum man AAahada Allaha lain atana min fadlihi lanassaddaqanna walanakoonanna mina alssaliheena
اور ان میں کوئی وہ ہیں جنہوں نے اللہ سے عہد کیا تھا کہ اگر ہمیں اپنے فضل سے دے تو ہم ضرور خیرات کریں گے اور ہم ضرور بھلے آدمی ہوجائیں گے
And among them are those who made a covenant with Allah that, "If He gives us by His munificence, we will surely give charity and surely become righteous."
(9 : 75)

Asiya Ruby

آؤ اللہ کی رسی کو مل کر تھام لیں Our all posts are researched carefully and designed by us. قرآن سمجھنے والے کبھی فرقہ نہیں بن سکتے اور فرقہ بننے والے کبھی قران نہیں سمجھ سکتے


Leave a Comment

Leave a Reply