logo-mini

آسمانی بجلی

السَـــــــلاَم وُ عَلَيــْــكُم و َرَحْمَةُ ﷲ وَ بَرَكـَـاتُه!

سورۃ الرعد 12 اور 13
وہی ہے جو تمہیں بجلی دکھاتا ہے ڈر اور امید کو اور بھاری بدلیاں اٹھاتا ہے
اور گرج اسے سراہتی ہوئی اس کی پاکی بولتی ہے اور فرشتے اس کے ڈر سے اور کڑک بھیجتا ہے تو اسے ڈالتا ہے جس پر چاہے اور وہ اللہ میں جھگڑا کر رہے ہوتے ہیں اور اس کی پکڑ سخت ہے

حضرت حسن رضی اللہ تعالی عنہ سے مروی ہے کہ نبی کریم صلی اللہ علیہ وسلم نے صحابہ کرام کی ایک جماعت کو عرب کے نہایت سرکشوں سیاہ دل کافر کو دعوت حق کے دینے کے لئے بھیجا
جس نے کہا کہ کیا اس کو خدا مان لو جس کو دیکھا نہیں وہ سونے کا ہے یا چاندی کا لوہے کا ہے یا تانبے کا صحابہ کرام رضی اللہ تعالی عنہ کو یہ بات بہت گراں گزری

نبی اکرم صلی اللہ علیہ وسلم نے صحابہ کرام رضی اللہ تعالی عنہ کو دوبارہ بھیجا تو اس نے جواب دیا کیا میں محمد صلی اللہ علیہ وسلم کی دعوت مان کر ایسے خدا کو مان لو جس کو میں نے نہ دیکھا نہ پہچانا

صحابہ کرام رضی اللہ تعالی عنہ کو بہت زیادہ غصہ آیا اور واپس ہو کر عرض کی کہ اس کا کفر تو اور بھی خبث پر ہے

آقائے دو جہاں صلی اللہ علیہ وآلہ وسلم نے پھر سے ان کو جانے کا حکم دیا تو وہ پھر چلے گئے اور اس کافر سے گفتگو کر ہی رہے تھے کہ سیاہ بجلی اس پر چمکی اور کھڑے کھڑے بجلی گری اور وہ کافر کو جلا دیا صحابہ کرام رضی اللہ تعالی عنہ اس کے پاس ہی بیٹھے تھے جب وہ واپس ہوئے تو راستے میں دوسرے صحابہ کرام رضی اللہ تعالی عنہ کی دوسری جماعت پہلے واپس ہونے والے صحابہ کرام کو ملے اور کہنے لگے کہ وہ کافر جل گیا؟؟

واپس آنے والے صحابہ کرام رضی اللہ عنہ نے حیرانگی سے دریافت کیا کہ آپ کو کیسے علم ہوا تو انہوں نے جواب دیا کہ ابھی آقائے دو جہاں صلی اللہ علیہ وسلم کے پاس سورۃ الرعد آیت 13 نازل ہوئی ہے

وَيُسَبِّحُ ٱلرَّعْدُ بِحَمْدِهِۦ وَٱلْمَلَٰٓئِكَةُ مِنْ خِيفَتِهِۦ وَيُرْسِلُ ٱلصَّوَٰعِقَ فَيُصِيبُ بِهَا مَن يَشَآءُ وَهُمْ يُجَٰدِلُونَ فِى ٱللَّهِ وَهُوَ شَدِيدُ ٱلْمِحَالِ
Wayusabbihu alrraAAdu bihamdihi waalmalaikatu min kheefatihi wayursilu alssawaAAiqa fayuseebu biha man yashao wahum yujadiloona fee Allahi wahuwa shadeedu almihali
اور گر ج اسے سراہتی ہوئی اس کی پاکی بولتی ہے اور فرشتے اس کے ڈر سے اور کڑک بھیجتا ہے تو اسے ڈالتا ہے جس پر چاہے اور وہ اللہ میں جھگڑتے ہوتے ہیں اور اس کی پکڑ سخت ہے،
And the thunder proclaims His purity with praise, and the angels out of fear of Him; and He sends the bolt of lightning – it therefore strikes upon whom He wills, whilst they are disputing concerning Allah; and severe is His seizure.
(13 : 13)

Asiya Ruby

لوحِ قلم کا مقصد آپ کی حوصلہ افزائی کرنا ہی نہیں بلکہ آپ کے یقین اورسوچ کومضبوط کرنا او معلومات پہنچانا ہے آپ کی سوچ ، کامیابی ، خوشی ، راحت اور سکون تک رسائی میں سب سے بڑی رکاوٹ ہے۔ ایک سوچ تنکے کو بھی پہاڑ بنا سکتی ہے۔ وہی سوچ ایک پہاڑ کوتنکے کی .مانند کمزوربھی بنا سکتی ہے، یعنی آپ کی اپنی سوچ ہی ممکن کو ناممکن اور ناممکن کو ممکن بنانے کی صلاحیت رکھتی ہے۔ آسیہ روبی The purpose of the "LoheQalam" is not only to encourage you but also to strengthen your beliefs and thinking and to convey information The biggest obstacle is access to your thinking, success, happiness, comfort, and tranquility. One thought can turn straw into a mountain. The same thinking can make you as weak as a mountain, that is, your own thinking is capable of making the impossible possible and the impossible possible


Leave a Comment

Leave a Reply